Tag » Tayammum

Fiqh of Purification in Hanafi Madhhab (part 4): Tayammum – the dry ablution

Tayammum (تيمم‎‎), in Islamic terminology, refers to the act of dry ablution instead of the usual wet ablution (i.e. Wudhu and Ghusl) due to some impediments, by wiping specific parts of the body as guided by the Sacred Law of Islam before one can make himself or herself available for Prayer and some other specific acts of worship. 608 kata lagi

4. Fiqh Of Worship (Hanafi)

Ahadees For Tayammum 11

حضرت ابو وائل سے روایت ہے کہ انہوں نے کہا: ابو موسیٰ اشعری رضی اللہ عنہ نے عبد اللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ سے کہا: جب پانی نہ ملے تو کیا نماز نہ پڑھی جائےانہوں نے کہا: اگر میں لوگوں کو ایسی اجازت دے دوں تو جب کسی کو سردی لگے گی وہ یہی کرلے گا یعنی تیمم کر کے نماز پڑھ لے گا ابو موسیٰ رضی اللہ عنہ نے کہا: پھر عمار رضی اللہ عنہ نے جو روایت حضرت عمر رضی اللہ عنہ سے بیان کی وہ کہاں گئی اُنہوں نے کہا: میں نہیں سمجھتا کہ حضرت عمر رضی اللہ عنہ نے عمار رضی اللہ عنہ کے قول پر قناعت کی ہو ۔ …

Tayammum

Ahadees For Tayammum 10

َ حضرت عمران بن حصین رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ اُنہوں نے کہا: ہم نبیﷺ کے ساتھ سفر میں تھے اور رات کو چلتے چلتے جب اخیر رات ہوئی تو ہم نے پڑاؤ ڈالا اور مسافر کےلیے اخیر رات کی نیند سے بڑھ کر کوئی نیندمیٹھی نہیں ہوتی،(پھر ہم اس طرح غافل ہوکر سوگئے) کہ ہمیں سورج کی گرمی نے بیدار کیا تو سب سے پہلے فلاں شخص ( ابو بکر رضی اللہ عنہ) جاگے، پھر فلاں شخص، پھر فلاں شخص ابو رجاء ان کو نام بنام بیان کرتے تھےلیکن عوف بھول گئے، پھر چوتھے حضرت عمر رضی اللہ عنہ جاگے اور ( ہمارا قاعدہ یہ تھا) جب نبیﷺ آرام فرماتے تو ہم آپﷺ کو جگاتے نہیں تھے یہاں تک کہ آپﷺ خود بیدار نہ ہوں کیونکہ ہم نہیں جانتے تھے کہ خواب میں آپﷺ پر کیا تازی وحی آتی ہے جب حضرت عمر رضی اللہ عنہ جاگے اور اُنہوں نے لوگوں پر جو آفت آئی وہ دیکھی اور وہ دل والے آدمی تھے انہوں نے بلند آواز سے تکبیر کہنا شروع کی برابر اللہ اکبر اللہ اکبر بلند آواز سے کہتے رہے یہاں تک کہ اُن کی آواز سے نبیﷺ بیدار ہوگئے جب آپﷺ بیدار ہوئے تو لوگ اپنی پرابلم کا شکوہ کرنے لگے، آپﷺ نے فرمایا: کچھ بات نہیں، یا اس سے کچھ نقصان نہ ہوگا، چلو اب کوچ کرو پھرتھوڑی دُور چلنے کے بعدآپﷺ اُترے اور وضو کا پانی منگوایا، وضوکیا، نماز کی اذان ہوئی آپ نے لوگوں کو نماز پڑھائی جب نماز سے فارغ ہوئے تو ایک شخص کو دیکھا وہ کنارے بیٹھا ہے اس نے لوگوں کے ساتھ نماز نہیں پڑھی آ پﷺ نے فرمایا: اے فلاں!

Tayammum

Ahadees For Tayammum 4

حضرت عمیر جو حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہ کے غلام تھے وہ فرماتے ہیں کہ میں اور عبد اللہ بن یسار جو حضرت میمونہ زوجہ نبی ﷺ کے غلام تھے ابو جہیم بن حارث انصاری کے پاس آئے ، تو ابو جہیم رضی اللہ عنہ نے فرمایا: نبیﷺ بئر جمل کی طرف سے آرہے تھے ( راستے میں ) ایک شخص ملا ( خود ابو جہیم ) اس نے آپﷺ کو سلام کیا لیکن نبیﷺ نے جواب نہ دیا یہاں تک کہ ایک دیوار کے پاس آئے ( اس پر ہاتھ مارا ) منہ اور ہاتھوں پر مسح کیا پھر اس کے سلام کا جواب دیا ۔

Tayammum

Ahadees For Tayammum 5

ِ سعید بن عبدالرحمٰن بن ابزی اپنے والد سے روایت کرتے ہیں کہ ان کے والد نے کہا: ایک شخص حضرت عمر بن خطاب رضی اللہ عنہ کے پاس آیا اور کہنے لگا اگر مجھ کو جنابت ہو اور پانی نہ ملے تو کیا کروں حضرت عمار بن یاسر رضی اللہ عنہ نے حضرت عمر بن خطاب رضی اللہ عنہ سے کہا: تم کو یاد نہیں ہم تم دونوں ایک سفر میں تھے (اور ہمیں جنابت ہوئی) تم نے تو نماز ہی نہیں پڑھی اور میں مٹی میں لوٹ پوٹ ہوا اور نماز پڑھ لی۔ پھر میں نے نبیﷺ سے یہ بیان کیا ۔ آپﷺ نے فرمایا: تمہارے لیے اتنا کافی تھا پھر آپﷺ نے اپنی دونوں ہتھیلیاں زمین پر ماریں اور ان کو پُھونک دیا پھر منہ اور دونوں ہاتھوں پر مسح کرلیا ۔ …

Tayammum

Ahadees For Tayammum 3

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے مروی ہے کہ انہوں نے ( اپنی بہن ) اسماء سے ایک ہار مانگ کرلیا اور وہ گرگیا تو رسول اللہﷺ نے ایک شخص (حضرت اسید بن حضیر رضی اللہ عنہ) کو اس کو ڈھونڈنے کےلیے بھیجا اس کو وہ ہار مِل گیا تو ( راستے میں جب اسید اور ان کے ہمراہی جا رہے تھے ) نماز کا وقت آگیا انہوں نے (بے وضو) نماز پڑھ لی پھر رسول اللہﷺ سے اس کا شکوہ کیا تب اللہ تعالیٰ نے تیمّم کی آیت اتاری، حضرت اسید بن حضیر رضی اللہ عنہ کہنے لگے: اے عائشہ رضی اللہ عنہا!

Tayammum

setengahnya Iman

Ath thohaarootul syatrotul iman, artinya kebersihan adalah setengahnya iman. Mungkin yang lebih sering didengar adalah an nadzoofatu minal iman yang artinya kebersihan adalah sebagian dari iman. 226 kata lagi

Fiqih Seruuu